قادیانیوں سے سوالات

کیا مرزاقادیانی اب بھی ملعون نہیں؟

سوال نمبر:51   مرزاقادیانی نے لکھا ہے: سمعت ان بعض الجھّال یقولون ان المہدی من بنی فاطمۃ میں نے سنا بعض جاہلوں سے کہ وہ کہتے ہیں بیشک مہدی علیہ السلام بنی فاطمہ سے ہوںگے۔                                                              (خطبہ الہامیہ حاشیہ، خزائن ج16 ص241)

            ان المہدی من ولد فاطمۃ یہ حدیث شریف میں واقع ہے۔ اس فرمان رسالت صلی اللہ علیہ وسلم  کو مرزاقادیانی جاہلوں کا قول بتاتا ہے۔ اب اس ملعون قادیان کا یہ فتویٰ براہ راست آنحضرت صلی اللہ علیہ وسلم پر ہے۔ جو سرتاپا اہانت پیغمبرصلی اللہ علیہ وسلم کو شامل ہے۔ کیا قادیانی مرزاقادیانی کے اس ملعون قول کو دیکھ کر قادیانیت کو ترک کرنے کی جرأت اپنے اندر رکھتے ہیں۔ کیا اﷲ کا سچا نبی اپنے سے پہلے نبی کی شان میں ایسی گستاخی کا ارتکاب کر سکتا ہے؟

کیا غیرنبی، نبی سے افضل ہوسکتا ہے؟

سوال نمبر:52   لاہوری مرزائیوں سے سوال کریں کہ کیا غیرنبی کسی نبی سے افضل ہوسکتا ہے؟۔ ان کا جواب یقینا نفی میں ہوگا تو پھر ان کے سامنے مرزاقادیانی کا یہ حوالہ پڑھیں: خدا نے اس امت میں مسیح موعود بھیجا۔ جو اس سے پہلے مسیح سے اپنی تمام شان میں بہت بڑھ کر ہے۔                                                                                    (دافع البلاء ص13، خزائن ج18 ص233)

            اس حوالہ سے ثابت ہوا کہ مرزاقادیانی کی شان حضرت مسیح ابن مریمعلیہ السلام سے زیادہ ہے۔ اگر مرزاقادیانی نبی نہیں تھا تو غیر نبی کا نبی سے افضل ہونا لازم آتا ہے۔ جب کہ لاہوری بھی مانتے ہیں کہ غیرنبی، نبی سے افضل نہیں ہوسکتا۔ تو ثابت ہوا کہ مرزاقادیانی نے نبوت کا دعویٰ کیا تھا۔ اس کا لاہوریوں کے پاس کوئی جواب نہیں۔ اس حوالہ میں جزوی فضیلت کی بھی نفی ہے۔ تمام شان میں یعنی من کل الوجوہ بہت بڑھ کر۔

کیا مرزاقادیانی کو مثیل محمدصلی اللہ علیہ وسلم کہہ سکتے ہو؟ العیاذ باﷲ!

سوال نمبر:53   مرزاقادیانی نے اپنے کو مثیل محمدصلی اللہ علیہ وسلم بھی قرار دیا۔ جیسا کہ اس کی تمام کتب میں ہے۔ قادیانی ویب سائٹ پر کلمتہ الفصل مرزابشیراحمد پسر مرزاقادیانی کا تو شاید کوئی صفحہ اس سے خالی نہیں۔ اب توجہ فرمائیے کہ رحمت عالمصلی اللہ علیہ وسلم تو دشمنوں کے مقابلہ میں پہاڑ پر کھڑے ہو کر فرماتے ہیں۔ ہل وجدتمونی صادقا اوکاذبا۰ قالوا جربناک مرارا ماوجدنا فیک الا صدقا وعدلا معاذ اﷲ اگر مرزاقادیانی مثیل تھا تو ایسے ہوتا۔ مگر وہ تو دادا کی اس زمانہ کی سات سو روپیہ کی رقم ادھر ادھر کے کاموں میں اڑا کر خیانت کا مرتکب ہوا۔ کیا اس کو مثیل کہہ سکتے ہیں؟

کیا اﷲتعالیٰ مرزاقادیانی کے مرید؟ (العیاذ باﷲ)

سوال نمبر:54مرزاقادیانی کا الہام ہے کہ: بایعنی ربی                                                 (البشریٰ ج2ص71، تذکرہ ص420، طبع سوم)

            مرزاقادیانی نے اس کا ترجمہ کیا: اے رب میری بیعت قبول فرما۔ مرزاقادیانی کا یہ ترجمہ کسی طور پر صحیح نہیں۔ اس کا سیدھا صحیح ترجمہ یہ ہے کہ میرے رب نے میری بیعت کی۔ قادیانی بتائیں کہ کیا وہ اﷲ تعالیٰ کو مرزاقادیانی کا مرید سمجھتے ہیں؟ کیا مرزاغلام احمد قادیانی نے اس میں اﷲ تعالیٰ گستاخی کا ارتکاب نہیں کیا؟

کیا مرزاقادیانی مریم تھا؟ تو اس کا شوہر کون؟

سوال نمبر:55   مرزاقادیانی نے (اربعین نمبر2 ص7، خزائن ج17 ص353) پر اپنا الہام نقل کیا۔ یا مریم اسکن انت وزوجک الجنۃ اس کا ترجمہ (اربعین نمبر2 ص17، خزائن ج17 ص364) میں یوں کیا۔ اے مریم تو اور تیرے دوست اور تیری بیوی بہشت میں داخل ہو۔ تیرے دوست کس لفظ کا ترجمہ ہے؟ پھر مریم کی بیوی کا کیا معنی؟ کیا عورت کی بیوی ہوتی ہے؟ اگر زوج کا معنی شوہر ہو تو مرزاقادیانی کا شوہر کون؟ نیز مرزامریم ہے تو سر پر پگڑی اور چہرے پر داڑھی کا کیا بنے گا؟ کیا خواتین کے لئے پگڑی اور داڑھی شرعاً وفطرتاً ہے؟